سبزیاں اور ہماری صحت

سبزیاں اور ہماری صحت

جدید تحقیق نے یہ بات ثابت کر دی ہے کہ سبزیوں میں ہر مرض کے خلاف مدافعتی اجزاء بکثرت پائے جاتے ہیں، اور بعض امراض میں سبزیاں اکسیر کا درجہ رکھتی ہیں، لیکن سبزیوں کا عام انداز میں استعمال ان کی افادیت و اہمیت کو متاثر کرتا ہے اور مطلوبہ نتائج حاصل نہیں ہو پاتے۔ اس کے لیے سبزیوں کواستعمال میں لانے سے قبل چند ضروری باتوں کا خیال رکھنا پڑتا ہے۔

٭ سبزیوں کو پکانے کے دوران یہ بات خصوصی طور پر ذہن نشین رکھیں کہ ان کی غذائیت ضائع نہ ہونے پائے اور جہاں تک ممکن ہو سکے ان کی غذائیت کو محفوظ رکھا جائے۔ اس کے لیے ہم آپ کو چند احتیاطی تدابیر سے آگاہ کرتے ہیں جنہیں مد نظر رکھتے ہوئے آپ سبزیوں میں موجود غذائی عناصر کو کم سے کم ضائع ہونے سے بچالیں گے۔

٭سب سے پہلے آپ سبزیوں کو کاٹنے سے قبل انہیں اچھی طرح صاف کر لیں۔ اگر سبزیاں پہلے کائی جائیں اور بعد میں ان کی صفائی کریں تو اس سے سبزیوں میں پائی جانے والی غذائیت کم ہو سکتی ہے، یعنی پانی کے ساتھ غذائی عناصر کے ضائع ہونے کا احتمال رہے گا۔

٭سبزیوں کو استعمال سے قبل بوائل کر لیں یا انہیں اسٹیم (بھاپ) میں پکائیں۔ پکاتے وقت آنچ دھیمی رکھیں اور انہیں زیادہ مت گلائیں، کیونکہ زیادہ گلنے سے سبزیوں میں موجود غذائی عناصر بھاپ کی شکل میں ضائع ہو جائیں گے

٭جہاں تک ممکن ہو سبزیوں کو دوبارہ گرم کرنے سے گریز کریں اور کوشش کریں کہ اتنی سبزی پکائیں جو آپ ایک مدت میں کھا سکیں۔ سبزیاں چھیلتے وقت اس بات کا دھیان رکھیں کہ وہ زیادہ نہ چھل جائیں کیونکہ زیادہ چھل جانے کی صورت میں بھی سبزیوں کی غذائیت ضائع ہو جاتی ہے۔

_سبزیاں زیادہ دیر تک پانی میں نہ بھگوئیں۔ اس سے بھی سبزیوں کی غذائیت پانی میں گھل کر ضائع ہو جاتی ہے*

٭ سبزیوں میں شفا بخش اور دافع امراض، خواب آور اور سکون بخش اجزاء بدرجہ اتم موجود ہوتے ہیں۔ پیاز اور مولی کو اعصاب کی مضبوطی کے لیے ایک ٹانک کا درجہ حاصل ہے۔

_٭ماہرین سو فیصد اس بات پر متفق ہیں کہ سبزیوں میں کینسر سے بچاؤ کی صلاحیت بھی پائی جاتی ہے۔ ان میں گاجر ، لہسن، گو بھی بند گوبھی، پالک، پیاز اور ٹماٹر خاص طور پر قابل ‌‍‍ذکر ہیں

administrator

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *